کیا تیمور کو کرینہ کا فلموں میں کام کرنا پسند نہیں؟

ممبئی: نامور بالی ووڈ اداکار سیف علی خان نے اپنے بیٹے تیمور سے متعلق انکشاف کیا ہے کہ تیمور جب ان کے ساتھ اکیلا ہوتا ہے تو اداس ہوجاتا ہے جب کہ کرینہ کی موجودگی اسے خوش کردیتی ہے۔ بالی ووڈ کے چھوٹے نواب تیمورعلی خان کی مقبولیت کسی بھی سپراسٹار سے کم نہیں بلکہ بعض میڈیا رپورٹس کے مطابق تیمور کے مداحوں کی تعداد ان کے والد سیف علی خان سے بھی زیادہ ہے اور یہ سچ بھی ہے کیونکہ تیمورابھی ایک سال کے بھی نہیں ہوئے ہیں اوران کے چاہنے والےلاکھوں کی تعداد میں موجود ہیں۔ لیکن ننھا تیمورابھی اس دور سے گزررہاہے جب اسے نہ تو مداحوں کی سمجھ ہے اورنہ مقبولیت کی، اسے اس بات سے کوئی فرق نہیں پڑتا کہ اس کے متعلق میڈیا پرکیا لکھا جارہا ہے اسے فرق پڑتا ہےتو صرف اپنے آس پاس اپنے والدین کی موجودگی سے۔
بھارتی میڈیا کے مطابق حال ہی میں سیف علی خان نے ایک انٹرویو کے دوران بتایا کہ کرینہ ان دنوں فلم ’’ویرے دی ویڈنگ‘‘کی شوٹنگ میں مصروف ہیں۔ کچھ روز قبل کرینہ فلم کی شوٹنگ کے لئے دہلی گئی تھیں اوراپنے ساتھ تیمورکو بھی لے گئی تھیں سیف نے ہنستے ہوئے کہا کہ مجھے اکیلے رہنا پسند ہے لہٰذا تیموراور کرینہ کے جانے سے میں بہت خوش تھا کیونکہ چند دن مجھے اکیلے گزارنے کا موقع ملا تھا۔ تاہم یہ وقتی خوشی تھی تھوڑے ہی دن بعد مجھے ان دونوں کی یاد آنی شروع ہوگئی۔
بعد ازاں جب کرینہ شوٹنگ کے دوسرے شیڈول کے لیے گئیں تو تیمور کو میرے پاس ہی چھوڑ گئیں، تیمور میرے ساتھ گھرمیں اکیلا تھااور کرینہ کے بغیر بہت اداس تھا اس وقت میں نے محسوس کیا کہ تیمورکرینہ کے بغیراداس ہوجاتا ہے اورکرینہ کی موجودگی اسے خوش کردیتی ہے۔ تاہم اب ہمارا بیٹا بہت خوش ہے کیونکہ اس کی ماں اس کے پاس واپس آگئی ہے اس کےعلاوہ کرینہ کے واپس آجانے سے ہمارے گھر میں چھائی اداسی بھی دورہوگئی ہے۔
سیف کی باتوں سے بظاہر ایسا محسوس ہوتا ہے کہ تیمور کو کرینہ  کا فلموں میں کام کرنا پسند نہیں کیونکہ وہ نہیں چاہتے کہ ان کی ماں ایک منٹ کے لیے بھی ان سے دور ہوں انہیں ہر وقت اپنے آس پاس کرینہ کی موجودگی خوش کردیتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

سوڈان میں جو کچھ ہورہا ہے اس پر میرا دل ٹوٹ سا گیا ہے، ماہرہ خان

سوڈان میں جو کچھ ہورہا ہے اس پر میرا دل ٹوٹ سا گیا ہے، ماہرہ خان

کراچی : معروف اداکارہ ماہرہ خان سوڈان میں فوجی مظالم کو نظرانداز کرنے پر عالمی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے