تینوں ریفرنسز کو یکجا کرکے ایک ہی فرد جرم عائد کی جائے، نواز شریف کی ہائیکورٹ سے اپیل

اسلام آباد: نواز شریف نے ریفرنسز یکجا کرنے کی درخواستیں مسترد کرنے کا فیصلہ ہائی کورٹ میں چیلنج کر دیا۔ سابق وزیراعظم نواز شریف نے اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی ہے، جس میں نیب اور احتساب عدالت کو فریق بنایا گیا ہے۔ عدالت سے استدعا کی گئی ہے احتساب عدالت کو تینوں ریفرنسز کو یکجا کر کے ایک ہی فرد جرم عائد کرنے کے احکامات جاری کیے جائیں اور 19 اکتوبر 2017 کے فیصلے کو کالعدم قرار دیا جائے۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ درخواست گزار کے خلاف احتساب عدالت میں تینوں ریفرنسز میں ایک ہی ٹرائل کیا جائے اور تینوں ریفرنسز میں ایک ہی دفعہ فرد جرم عائد ہونے تک احتساب عدالت کی کارروائی کو معطل کیا جائے۔ تینوں ریفرنسز میں جے آئی ٹی کے نو والیم شامل ہیں۔ واضح رہے کہ 19 اکتوبر کو سابق وزیراعظم نواز شریف نے احتساب عدالت میں نیب ریفرنس یکجا کرنے کی درخواستیں دائر کیں تھیں جس کو عدالت نے مسترد کرتے ہوئے ان پر فرد جرم عائد کی تھی جب کہ احتساب عدالت نے کل سابق وزیراعظم نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کو طلب کر رکھا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

کامیاب جوان پروگرام ملک بھر میں زبردست پذیرائی

کامیاب جوان پروگرام ملک بھر میں زبردست پذیرائی

اسلام آباد: وزیراعظم کامیاب جوان پروگرام کو ملک بھر میں زبردست پذیرائی مل رہی ہے، …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے