جنیاتی انجنئرنگ نیوکلیئر ہتھیاروں سے زیادہ تباہ کن ہوگی، پیوٹن

ماسکو: روس کے صدرولادی میر پیوٹن نے دنیا کوخبردارکیاہے کہ انسانوں کی جینیاتی پروگرامنگ نیوکلیئرہتھیاروں سے زیادہ خطرناک ثابت ہوگی،اس ٹیکنالوجی سے بےرحم ترین فوجی بھی پیداکئے جاسکیں گے۔سوچی میں نوجوانوں اورطلبہ سے خطاب کرتے ہوئے روس کے صدرپیوٹن نے کہا کہ جینیاتی انجینئرنگ ادویہ سازی سمیت کئی شعبوں میں انہتائی سودمندہے مگر جینیاتی انجینئرنگ سے مخصوص صلاحیتوں کے حامل انسان بھی پیداکئے جاسکیں گے۔انہوں نے کہا جینیاتی انجینئرنگ سے ذہین ترین ریاضی دان اورماہرموسیقی پیداکیاجاناہی تصورنہیں کیاجاناچاہیے بلکہ جینیاتی انجینئرنگ ہی سے ایسافوجی بھی پیداکیاجاسکے گاجوسفاک وبے رحم ہو۔تکلیف محسوس نہ کرنے والے فوجی پیداکئے گئے توسفاکیت انتہاپرپہنچ جائےگی اور غیرذمہ داری کاایسامظاہرہ نیوکلیئرہتھیاروں سے زیادہ تباہ کن ہوگا۔انہوں نے کہا کہ انسانیت ایسے دورمیں داخل ہورہی ہے جہاں انتہائی ذمہ داری کی ضرورت ہے، انسانی اقدارکاخیال رکھاجاناانتہائی ضروری ہے۔

یہ بھی پڑھیں

امریکہ نے عرب اتحادیوں سے باج دینے کا مطالبہ کر دیا

امریکہ نے عرب اتحادیوں سے باج دینے کا مطالبہ کر دیا

امریکہ نے سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات سے خلیج فارس میں تعینات امریکی فوجیوں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے