القاعدہ دہشت گرد کی سزائے موت عمر قید میں تبدیل

کراچی:  سندھ ہائی کورٹ کے ایپلٹ بینچ نے القاعدہ دہشت گرد کی اپیل کی سماعت کرتے ہوئے اس کی سزائے موت کو عمر قید میں تبدیل کر دیا۔ انوارالحق کو 2006ء میں امریکی قونصلیٹ کے قریب ہونے والے خودکش حملے کے دوران ایک امریکی سفارت کار اور دیگر 3 افراد کی ہلاکت کے الزام میں سزائے موت دی گئی تھی، ملزم پر حملے کے ماسٹر مائنڈ ہونے کا الزام تھا۔ پراسیکیوٹر کا کہنا تھا کہ مبینہ خودکش بمبار کی شناخت محمد طاہر کے نام سے ہوئی تھی جس نے امریکی سفارت خانے کی گاڑی کے ساتھ بارود سے بھری گاڑی ٹکرا دی تھی۔ سزائے موت کو تبدیل کرنے والے ایپلٹ بینچ نے اپنے فیصلے میں کہا کہ پراسیکیوشن کے لیے پیش کیے جانے والے شواہد میں تضاد ہے۔

یہ بھی پڑھیں

نیا بینچ تشکیل, دینے کے لیے, معاملہ چیف جسٹس کو بھجوا, دیا

نیا بینچ تشکیل دینے کے لیے معاملہ چیف جسٹس کو بھجوا دیا

کراچی: جسٹس محمد سلیم جیسر نے کرپشن کیس میں آغا سراج درانی اور دیگر کی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے