پولیس اہلکار کو ٹکر مارنے پر مجرم کو ’پلے کارڈ‘ اٹھا کر کھڑے ہونے کی انوکھی سزا

کراچی: سابق صدر مملکت جنرل (ر) پرویز مشرف کے پروٹوکول میں موجود پولیس اہلکار کو ٹکر مارنے پر عدالت نے مجرم کو ایک سال تک پلے کارڈ اٹھا کر روڈ پر کھڑے ہونے کی انوکھی سزا سنا دی۔ تفصیلات کے مطابق کراچی میں جوڈیشل مجسٹریٹ کی عدالت میں پرویز مشرف کے پروٹوکول میں موجود پولیس اہلکار کو ٹکر مارنے والے ملزمان قاسم اور اسلام کو پیش کیا گیا، عدالت نے پولیس اہلکار کو ٹکر مارنے کے جرم میں ملزم قاسم کو ایک سال تک پلے کارڈ اٹھا کر روڈ پر کھڑے ہونے کی سزا سنائی، جبکہ دوسرے ملزم اسلام کو عدم ثبوت کی بنا پر رہا کر دیا گیا۔ عدالتی فیصلے کے مطابق ملزم قاسم ہر جمعہ کو 2 گھنٹے کراچی میں قائداعظم کی رہائش گاہ کے پاس پلے کارڈ اٹھا کر کھڑا رہے گا، جس پر “احتیاط کیجیے غفلت اور لاپرواہی سے گاڑی چلانا جان لیوا ہے” تحریر ہوگا، جبکہ ٹریفک پولیس کا سیکشن آفیسر مانیٹرنگ بھی کرے گا۔ واضح رہے کہ 2015ء میں مجرم قاسم اور اسلام نے موٹر سائیکل سے سابق صدر مملکت جنرل مشرف کے پروٹوکول میں موجود پولیس اہلکار کو ٹکر مار دی تھی۔

یہ بھی پڑھیں

لیاقت علی خان کا 68 واں یوم شہادت

لیاقت علی خان کا 68 واں یوم شہادت

کراچی: لیاقت علی خان نے سن 1896ء میں بھارت کے علاقے کرنال کے نواب رستم …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے