خیبرپختون خوا کالج اساتذہ کی ہڑتال، عمران خان کے گھر کے باہر دھرنے کی دھمکی

پشاور: خیبرپختون خوا کے کالجز کے اساتذہ نے ہڑتال کرتے ہوئے بنی گالا میں عمران خان کی رہائش گاہ کے باہر دھرنے کی دھمکی دے دی۔ خیبر پختونخوا کے تمام کالجز کے اساتذہ نے مطالبات کی منظوری کے لیے ہڑتال کا اعلان کرتے ہوئے تمام نصابی اور غیر نصابی سرگرمیاں معطل کردیں جس کے نتیجے میں طلبہ کا مستقبل خطرے میں پڑگیا۔ خیبر پختون خوا پروفیسرز اینڈ لیکچررز ایسوسی ایشن ایکشن کمیٹی کا اجلاس گورنمنٹ کالج پشاورمیں منعقد ہوا جس میں تمام کالجز کے نمائندے شریک ہوئے۔ اساتذہ نے مطالبات کی منظوری تک صوبہ بھر میں تمام نصابی اور غیر سرگرمیاں تعلیمی معطل کرنے کا فیصلہ کیا۔ چیئرمین ایکشن کمیٹی پروفیسر جمشید نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی صوبائی حکومت نے تمام کالج اساتذہ کے مسائل و مطالبات کو یکسر نظر انداز کردیا ہے، آج سے صوبہ بھر تعلیمی سرگرمیاں معطل رہیں گی، جب کہ مطالبات کی عدم منظوری کی صورت میں بنی گالہ اسلام آباد میں چیرمین پی ٹی آئی کی رہائش گاہ کے باہر دھرنا دیا جائے گا۔ چیرمین ایکشن کمیٹی جمشید خان نے تمام لوکل یونٹس کے صدور کو ایکشن کمیٹی کے فیصلوں کو قابل عمل بنانے کے لئے اقدامات کرنے کی ہدایت کی۔

یہ بھی پڑھیں

خیبر پختونخوا حکومت نے بینک آف خیبر کے سربراہ کو برطرف

خیبر پختونخوا حکومت نے بینک آف خیبر کے سربراہ کو برطرف

پشاور: بینک کی جانب سے جاری ہونے والے ایک اور سرکلر میں کہا گیا کہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے