قبائلی علاقوں کے لوگوں نے عسکریت پسندی کے خلاف بہت بڑی قیمت ادا کی ہے، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیر اعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ فاٹا کو مرکزی دھارے میں لانے اور عارضی بےگھر افراد کی مکمل بحالی حکومت کی اہم ترجیح ہے، قبائلی علاقوں کے لوگوں نے عسکریت پسندی کے خلاف بہت بڑی قیمت ادا کی ہے۔ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا وزارت سیفران کی جانب سے وزیراعظم آفس میں منعقد ہوا جس میں وزرات کے حکام نے انہیں بریفنگ دی اس موقع پر وزیراعظم نے فاٹا کو مرکزی دھارے میں لانے اور قبائلی علاقوں کے افراد کو سماجی و معاشی ترقیاتی منصوبوں کے ذریعے ملک کے دیگر علاقوں کی سطح پر لانے کیلئے اٹھائے گئے اقدامات کا جائزہ لیا۔

وزیراعظم کو بتایا گیا کہ 2 لاکھ 37 ہزار بےگھر خاندانوں میں سے صرف 16 ہزار خاندان کی بحالی باقی ہے، انہیں آگاہ کیا گیا کہ بےگھر افراد کی بحالی میں اب تک 52 ارب 87 کروڑ 4 لاکھ خرچ کئے جا چکے ہیں۔ وزیراعظم نے بے گھر افراد کی بحالی کیلئے اب تک کی جانے والی پیشرفت پر اطمینان کا اظہار کیا۔ اجلاس میں افغان مہاجرین کا مسئلہ بھی زیربحث آیا۔ انہیں بتایا گیا کہ ملک میں اس وقت 14 لاکھ رجسٹرڈ اور تقریباً 6 لاکھ غیر رجسٹرڈ افغان مہاجرین موجود ہیں۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ رضا کارانہ وطن واپسی پروگرام کے تحت محض 6 لاکھ افغان مہاجرین اپنے وطن واپس گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

اسحٰق ڈار, کے اثاثہ جات, ان کے, ذرائع آمدن, سے زائد ہیں

اسحٰق ڈار کے اثاثہ جات ان کے ذرائع آمدن سے زائد ہیں

اسلام آباد: اپنے بیان میں ان کا کہنا تھا اسحٰق ڈار کے اثاثوں میں 83-1982 …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے