جموں و کشمیر کے سابق صدر ڈاکٹر کرن سنگھ سرینگر پہنچ گئے

سری نگر: مقبوضہ کشمیر کے سابق صدر اور کانگریس کے سینئر لیڈر ڈاکٹر کرن سنگھ آج سرینگر کے چار روزہ دورے پر پہنچ گئے ہیں، جہاں وہ مسئلہ کشمیر کے حوالے سے  ریاستی کانگریس کے لیڈران اور اپوزیشن جماعتوں سے تبادلہ خیال کریں گے۔ ذرائع کے مطابق کرن سنگھ سرینگر میں چار روز تک قیام کریں گے، جس دوران وہ کئی سیاسی جماعتوں کے لیڈروں اور نمائندوں کے علاوہ ریاستی کانگریس کی مقامی لیڈرشپ سے بھی ملاقات کریں گے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ بھارت کے سابق وزیراعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ کی سربراہی میں کانگریس کے کشمیر سے متعلق پالیسی ساز گروپ کے دورہ کشمیر کے دوران ڈاکٹر کرن سنگھ بھی موجود تھے اور وہ اسی بات چیت کو آگے بڑھانا چاہتے ہیں، جو کانگریس پالیسی ساز گروپ کے ساتھ مختلف جماعتوں کے لیڈروں نے کی۔ غور طلب بات یہ ہے کہ ڈاکٹر کرن سنگھ اس وقت کشمیر کا دورہ کر رہے ہیں، جب ان کے والد اور ریاست کے آخری مہاراجہ، مہاراجہ ہری سنگھ کی یوم پیدائش پر حکومتی تعطیل کا مخمصہ پیدا ہوا تھا۔

ڈاکٹر کرن سنگھ نے مخلوط حکومت کو نشانہ بناتے ہوئے کہا تھا ’’مرحوم شیخ محمد عبداللہ کی یوم پیدائش پر حکومتی تعطیل کر کے جب اہل کشمیر کے جذبات کا احترام کیا جاتا ہے، تو جموں کے لوگوں کے اس مطالبے کو کیوں نظرانداز کیا جارہا ہے کہ مہاراجہ ہری سنگھ کی یوم پیدائش پر بھی حکومتی تعطیل ہونی چاہے‘‘۔ ڈاکٹر کرن سنگھ کے دونوں فرزند مخلوط حکومت میں شامل ہیں۔ ان کے بڑے فرزند اجے شترو سنگھ بی جے پی کے قانون ساز کونسل میں رکن ہیں اور چھوٹے فرزند وکرم دتیہ پی ڈی پی کی طرف سے قانون ساز کونسل میں اپنی جماعت کی نمائندگی کر رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

تنازعہ کشمیر کی بدولت پورا جنوبی ایشیا ایک ہیجانی کیفیت کا شکار ہے، مسعود خان

صدر آزاد کشمیر سردار مسعود خان نے کہا ہے کہ ڈاکٹر عاصمہ شاکر کی کتاب …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے