یمن پہ سعودی جارحانہ حملے جاری، خواتین و بچوں سمیت مزید 12 افراد جاں بحق

صنعاء: یمن میں مبینہ طور پر عرب عسکری اتحاد کے فضائی حملے میں خواتین و بچوں سمیت 12 افراد ہلاک ہو گئے۔ غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق مقامی افراد اور حوثییوں کا دعویٰ ہے کہ یمن کے دارالحکومت صنعاء میں سعودی عرب کی سربراہی میں بننے والے عرب عسکری اتحاد کے طیاروں نے بمباری کی جس کے نتیجے میں 4 بچوں اور دو خواتین سمیت 12 افراد ہلاک ہو گئے۔ اطلاعات کے مطابق صنعاء سے 70 کلو میٹر دور ضلع حریب القرامش میں ایک گاڑی کو نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں گاڑی میں سوار تمام مسافر مارے گئے۔ خیال رہے کہ حریب القرامش میں حوثیوں کا قبضہ ہے جو گزشتہ تین برس سے دارالحکومت صنعاء اور ملک کے شمال مغربی علاقوں پر قابض ہیں۔ گزشتہ ماہ صنعاء کے قصبے ارہاب میں واقع ایک ہوٹل پر بھی فضائی حملہ کیا گیا تھا جس کے نتیجے میں 60 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ ستمبر 2014 میں حوثیوں نے صنعاء پر حملہ کر کے بین الاقوامی طور پر تسلیم شدہ صدر منصور ہادی کی حکومت کو ختم کرنے کی کوشش کی تھی۔ اس کے جواب میں سعودی عرب کی سربراہی میں عرب عسکری اتحاد نے مارچ 2015 میں یمن کے خلاف فوجی کارروائی کا آغاز کر دیا تھا۔ اقوام متحدہ کی رپورٹ کے مطابق فروری 2014 سے اب تک یمن میں 10 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستانی بہت پیار اور محبت دینے والی قوم ہے، کانگریس سربراہ شرد پوار

پاکستانی بہت پیار اور محبت دینے والی قوم ہے، کانگریس سربراہ شرد پوار

نئی دہلی: بھارتی نیشنل کانگریس پارٹی کے سربراہ شرد پوار نے کہا ہے کہ پاکستان …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے