پاکستان میں عالمی اسکواش مقابلوں پر عائد پابندی ختم

پاکستان میں انٹرنیشنل کھیلوں کی سرگرمیاں بتدریج بحال ہو رہی ہیں جب کہ  پروفیشنل اسکواش ایسوسی ایشن نے پاکستان میں عالمی سکواش مقابلوں پر عائد پابندی ختم کر دی ہے۔ اسکواش کی عالمی تنظیم پروفیشنل اسکواش ایسوسی ایشن نے سکیورٹی کی خراب صورتحال کی بنا پر رواں سال فروری میں بین الاقوامی سکواش مقابلوں کے پاکستان میں انعقاد پر پابندی عائد کی تھی تاہم اب حالات بہتر ہونے کے بعد بین الاقوامی اسکواش ٹورنامنٹس کی میزبانی پر عائد پابندی اٹھا لی گئی ہے۔ اب دسمبر میں میں اسلام آباد میں پی ایس اے کے دو بین الاقوامی مقابلوں کا انعقاد کیا جائے گا۔

پی ایس اے کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر الیکس گف کا کہنا ہے کہ دسمبر میں اسلام آباد میں دو ٹورنامنٹس کا انعقاد کیا جائے گا، مینز ایونٹ کی انعامی رقم 50 ہزار ڈالر جبکہ ویمنز ٹورنامنٹ 25 ہزار ڈالر ہو گی۔ انھوں نے کہا کہ دونوں ٹورنامنٹس کا انعقاد پی ایس اے کے سکیورٹی ماہرین کی جانب سے پیش کی گئی رپورٹ پر منحصر ہو گا۔ پروفیشنل ایونٹس کا انعقاد پاکستان میں بین الاقوامی اسکواش کی بحالی کی جانب پہلا قدم ہے۔

پاکستان کے اسکواش لیجنڈ جہانگیر خان نے پروفیشنل اسکواش مقابلوں کی واپسی کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ انٹرنیشنل ٹورنامنٹس کے پاکستان میں انعقاد سے نوجوان کھلاڑیوں کو ہوم گراﺅنڈ پر کھیلنے کا موقع ملنے سے ان کے جوش و خروش میں اضافہ ہو گا اور ان کی صلاحیتیں نکھر کر سامنے آئیں گی۔

یہ بھی پڑھیں

لیستھ ملینگا نے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا

سری لنکا کے فاسٹ بولر لیستھ ملینگا 26 جولائی کو اپنا آخری ون ڈے میچ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے