لڑکی نے ایسا لباس پہن لیا کہ فوجیوں نے سرعام اتارنے کا حکم دے دیا، اس میں ایسا کیا تھا؟ خبر نے کھلبلی مچادی

ابوجہ: نائیجیریا میں یونیورسٹی کی ایک طالبہ فوجی یونیفارم پہن کر سڑک پر نکل آئی لیکن یہ غلطی اس کے تصور سے کہیں زیادہ مہنگی ثابت ہوئی۔ بیچاری لڑکی کے ساتھ اس وقت انتہائی افسوسناک واقعہ پیش آ گیا جب ایک جگہ اصلی فوجیوں نے اسے روک لیا اور سرعام یونیفارم اتارنے پر مجبور کردیا۔ ویب سائٹ ورلڈ وائرڈ ویئرڈ نیوز کی رپورٹ کے مطابق لڑکی امینو کانو یونیورسٹی کی طالبہ ہے۔

عینی شاہدین نے بتایا کہ لڑکی کو فوجی وردی میں ملبوس دیکھ کر فوجی اہلکاروں نے اسے روک لیا اور اس سے پوچھ گچھ شروع کردی، اور پھر اسے وہیں یونیفارم اتارنے کا حکم دے دیا۔ لڑکی نے فوجیوں سے درخواست کی کہ اسے کپڑے تبدیل کرنے کیلئے گھر جانے کی اجازت دی جائے لیکن فوجیوں نے اس کی ایک نہ سنی اور سڑک کنارے سب کے سامنے اسے برہنہ کردیا۔ وہاں موجود ایک شخص نے لڑکی کو تن ڈھانپنے کیلئے تولیہ دیا اور لوگوں نے ایک ٹیکسی میں بٹھا کر اسے گھر پہنچایا۔

یہ بھی پڑھیں

حوثی باغیوں کی جانب سے ابہا ائیرپورٹ پر حملہ قابل مذمت ہے، شیخ عبدالرحمان السدیس

حوثی باغیوں کی جانب سے ابہا ائیرپورٹ پر حملہ قابل مذمت ہے، شیخ عبدالرحمان السدیس

صدر عام برائے امور مسجد حرام و مسجد نبویﷺ شیخ ڈاکٹر عبدالرحمان بن عبدالعزیز السدیس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے