ضیا کو پتہ ہوتا کہ انکا بیٹا 62 اور63 میں پھنسے گا تو وہ اسے ختم کردیتا، خورشید شاہ

چنیوٹ: پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ اگر ضیاء الحق کو پتہ ہوتا کہ ان کا روحانی بیٹا 62 اور 63 میں پھنس جائے گا تو وہ اسے ختم کر دیتا۔ چنیوٹ میں جلسہ عام سے خطاب میں سابق وزیراعظم نوازشریف کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ آج کوئی کنٹینرپر چڑھ کر خود کو معصوم ثابت کرنے کی کوشش کر رہا ہے جب کہ اگر ضیاء الحق کو پتہ ہوتا کہ ان کا روحانی بیٹا آئین کے آرٹیکل 62 اور 63 میں پھنس جائے گا تو وہ اسے ختم کر دیتا۔
خورشید شاہ نے کہا کہ آج ملک میں گالی کی سیاست کی جا رہی ہے جب کہ کچھ لوگ کہتے ہیں پنجاب سے پیپلزپارٹی ختم ہو گئی ہے لیکن میرا ان کو جواب ہے کہ جب تک بھٹو کا ایک بھی ماننے والا زندہ ہے تب تک پارٹی زندہ رہے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ پیپلز پارٹی اقتدار کی سیاست نہیں کرتی کیوں کہ ہمیں حکمران بننے کا کوئی شوق نہیں ہے جب کہ ذوالفقار علی بھٹو ملک میں جمہوریت چاہتے تھے اور اقتدار غریب کے لئے چاہتے تھے۔

یہ بھی پڑھیں

دھرنے,کے موقع, پر بھیرہ انٹرچیج پرتوڑ پھوڑ, اورجلاؤگھیراؤ

دھرنےکے موقع پر بھیرہ انٹرچیج پرتوڑ پھوڑ اورجلاؤگھیراؤ

سرگودھا: انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت نے پاکستان عوامی تحریک کےسربراہ ڈاکٹرطاہرالقادری کواشتہاری قراردے کرگرفتار …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے