عمران خان بلیک بیری سے لڑکیوں کو ’’غلط پیغامات‘‘ بھیجتے ہیں، عائشہ گلالئی کا الزام

اسلام آباد: تحریک انصاف کی ”باغی“ ممبر قومی اسمبلی عائشہ گلالئی نے کہا ہے کہ عمران خان پاکستان کو مغرب بنا رہے ہیں انہوں نے لڑکیوں کی باریاں لگائی ہوئی ہیں مجھے پہلا پیغام عمران خان نے2013ءمیں بھیجا ، وہ مسلسل تحریک انصاف کی خواتین کو پیغامات بھیجتے ہیں۔میری باتوں کی تصدیق ان کے بلیک بیری کا ریکارڈنکلوا کر دیکھا جائے ، چیئرمین تحریک انصاف خواتین کو غلط پیغامات بھیجتے ہیں اور خواتین کو بھی کہتے ہیں کہ وہ بھی بلیک بیری ٹو رکھیں ، بہت سی خواتین عمران خان سے نالاں ہیں مگر وہ نہیں بولتیں مگر میں غیرت مند وزیر خاندان سے تعلق رکھتی ہوں اس لئے انہیں بے نقاب کرنے کے لئے میدان میں آئی ہوں، گذشتہ روز عوامی وفد لے کر عمران خان کے پاس ان کے وزیر اعلیٰ پرویز خٹک کی کرپشن کے ثبوت لے کر گئی مگر انہوں نے ثبوت ایک طرف رکھ دئیے، جہانگیر ترین اور پرویز خٹک غیر قانونی ٹھیکوں سے پیسے بچا کر عمران خان کا کچن چلاتے ہیں۔

 

ممبر قومی اسمبلی عائشہ گلالئی نے چیئر مین تحریک انصاف عمران خان پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ پاکستانی معاشرے کو مغربی معاشرہ بنانا چاہتے ہیں ، ان کی پارٹی میں خواتین غیر محفوظ ہیں ، ، عزت دار لڑکیوں کی عزتیں عمران خان اور ان کے ارد گرد بیٹھے لوگوں کی وجہ سے شدید خطرے میں ہیں، بہت سی لڑکیاں بولنا چاہتی ہیں مگر ایسے حالات میں وہ بولنے کی ہمت نہیں کر سکتیں، عمران خان پارٹی میں موجود لڑکیوں سے کہتے ہیں کبھی کس کس کی باری ہے،میں کہتی ہوں کہ خان صاحب اب آپ کی باری ہے،عمران خان کا ایک کرتوت ایسا بھی ہے جس کے انتہائی تکلیف دہ ہے، خان صاحب لڑکیوں غلط ٹیکسٹ پیغامات بھیجتے ہیں۔67سال کی عمر میں بھی عادتیں تبدیل نہیں ہوتیں ،میں سارے والدین اور بھائیوں سے کہتی ہوں کہ اس پارٹی میں ہماری عزتیں محفوظ نہیں، جس شخص کو آپ فرشتہ سمجھتی ہیں اس شخص کی حرکتیں کیا ہیں اس کی وجہ سے پاکستان میں آپ کی عزتیں محفوظ  ہیں۔میں نواز شریف کی پارٹی جوائن نہیں کر رہی لیکن نواز شریف پر سارے الزامات لگا سکتے ہیں مگر کم ازکم اس کے پاس عزتیں تو محفوظ ہیں، نواز شریف عزتیں دینا جانتا ہے، اگر جھوٹ اور بے ایمانی پر نا اہلی ہو جاتا ہے، اسی آرٹیکل میں عمران خان کی اخلاقیات کے بارے میں بھی دیکھا جائے.

ان کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کے ججز بھی اس کو دیکھیں جو آدمی آپ کا وزیر اعظم بننے جا رہا ہے کیا ایسا آدمی آپ کے ملک کو چلانے کا اہل ہو سکتا ہے۔ مجھ پر الزام لگایا جا رہا ہے کہ میں ٹکٹ نہ ملنے پر خائف ہوں حالانکہ اس میں کوئی بھی حقیقت نہیں ہے میں کل عمران خان کے پاس گئی تھی میں اکیلی نہیں گئی تھی بلکہ میرے ساتھ خیبر پختونخواہ کے وفد بھی شامل تھا، ہم سب پرویز خٹک کے خلاف کرپشن کے ثبوت لے کر گئے تھے ، میرے ساتھ رکشہ یونین کا صدر تھا ، ان کے10رکشے ایک حادثے میں جل گئے تھے لیکن پرویز خٹک انہیں معاوضہ دینے کی بجائے مسلسل نظر انداز کرتے رہے، اسی طرح ریڑھی بانوں کا وفد بھی تھا جو پرویز خٹک کے مظالم کے خلاف شکایت کرنے عمران خان کے پاس گئے تھے،ہم لوگ پرویز خٹک کے پاس بھی گئے میرے ساتھ تب انیس اور بیس گریڈ کے افسرتھے جنہیں پرویز خٹک نے غنڈے کہا۔پرویز خٹک کے وزیر اعلیٰ بننے سے ان کے سارے رشتہ دار فائدہ اٹھا رہے ہیں انہوں نے مخصوص نشستوں پر اپنے سارے رشتہ داروں کو دئیے گئے۔

انہوں نے کان کنی کی غیر قانونی لیز اپنے فرسٹ کزن کو دی جبکہ پرویز خٹک کا بیٹا سارے تبادلے اور تقرریاں پیسے لے کر کرتا ہے، تنگی مائننگ ، نوشہرہ مائننگ کا ٹھیکہ بھی پرویز خٹک نے اپنے رشتہ دار کو دیا، خیبر بینک کا سکینڈل بھی پرویز خٹک کا تیار کیا گیا تھا ،پرویز خٹک کے ٹھیکوں اور جہانگیر خان ترین کے ذریعے عمران خان کا کچن چلتا ہے۔میں یہ سارے ثبوت لے کر عمران خان کے پاس گئی ان کو پرویز خٹک کی کرپشن کے سارے ثبوت پیش کئے مگر عمران خان شاید ان کے ہاتھوں بلیک میل ہورہے ہیں اس لئے ان کے کرپشن کے ثبوتوں اور الزامات پر وہ آنکھیں بند کئے ہوئے ہیں۔تحریک انصاف کے ایم این ایز اور ایم پی ایز پرویز خٹک سے ناراض ہیں پارٹی میں ممبران اسمبلی کی توہین کی جاتی ہے، سبھی عمران خان ، پرویزخٹک اور جہانگیر خان ترین سے نالاں ہیں ۔مجھ پر الزام ہے کہ میں ٹکٹ کے لئے عمران خان کے پاس گئی اور تین گھنٹے میری ملاقات ہوئی لیکن اس میں کوئی صداقت نہیں ہے چیرمین تحریک انصاف کے ساتھ میری صرف 15منٹ تک ملاقات ہوئی۔

تحریک انصاف سے دوریوں پر عائشہ گلالئی کا کہنا تھا کہ میں بنی گالہ میٹنگز میں نہیں جاتی، میٹنگز میں عمران خان ہمیں بتاتے تھے کہ کس پر کس طرح کیچڑ اچھالنا ہے، لوگوں کے نام بگاڑنے کے لئے باضابطہ لوگوں کو تربیت دیتے، انہوں نے کردار کشی میں کسی کو بھی نہیں بخشا ، عمران خان نے محترمہ بے نظیر بھٹو کے خلاف بھی انتہائی غلیظ زبان استعمال کی ۔ جب پیپلز پارٹی میں تھی تو بے نظیر بھٹو نے مجھے کہا کہ تم مجھے ماں کہہ کر پکارو، مجھے محترمہ کے خلاف الفاظ کی وجہ سے تکلیف ہوئی، بے نظیر نے مجھے ایک ایم این اے اور ایک ایم پی اے کا ٹکٹ دیا تھا، ان کی ٹکٹوں کی مجھے کوئی ضرورت نہیں ہے،میں پی ٹی آئی ورکرز کے ساتھ ہوتی ہوں ان کو میں خراج تحسین پیش کرتی ہوں ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ پی ٹی آئی میں دو قسم کے افراد ہیں ایک بنی گالہ میں ہیں اور دوسرے کچھ کم تر ہیں ، عمران خان اپنے کارکنوں کا ادنی اور گھٹیا سمجھتے ہیں ،عمران خان غرور میں مبتلا ہیں، غرور کرنا شیطان کا کام ہے ، عمران خان شیطانیت سے نکل آئیں کیوں وہ آج کارکنوں کی قربانیوں کی وجہ سے یہاں پر پہنچے ہیں، خان صاحب کو تھوڑا سا نفسیاتی مسئلہ ہے وہ ذہین لوگوں سے تھوڑا سا جلن بھی محسوس کرتے ہیں۔

عائشہ گلالئی کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف کے مرد کارکنان عمران خان کی جیلسی اور خواتین ان کی اخلاقیات کی وجہ سے جلدچھوڑ دیں گے۔ عمران خان کی قربت کا واحد طریقہ ہے ان کی ہاں میں ہاں منائی جائے، ان جیسے جوتے پہنے ان کے ساتھ دوڑیں لگائے انہیں ہیلی کاپٹر کی سیر کرائے۔ عائشہ گلالئی کا مزید کہنا تھا کہ میں سوشل میڈیا پر کم اور عملی میدان میں زیادہ ہوتی ہوں ایک پختون کی بیٹی ہوں ، پختون بھوکا رہ سکتا ہے مگر اپنی عزت اور ناموس پر سمجھوتہ نہیں کر ے گا۔ پختون قوم عمران خان کو کبھی بھی معاف نہیں کرے گی میں شدید ذہنی اضطراب میں مبتلا ہوں اسی وجہ سے پی ایچ ڈی میں داخلہ لے لیا ، مستقبل قریب میں بین المذاہب ہم آہنگی کے لئے کام کروں گی لیکن ابھی تمام بھائیوں سے اپیل کرتی ہوں کہ اپنی بیٹیوں کے عزت کا تحفظ کر لیں۔

یہ بھی پڑھیں

کامیاب جوان پروگرام ملک بھر میں زبردست پذیرائی

کامیاب جوان پروگرام ملک بھر میں زبردست پذیرائی

اسلام آباد: وزیراعظم کامیاب جوان پروگرام کو ملک بھر میں زبردست پذیرائی مل رہی ہے، …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے