القاعدہ سے تحریک کشمیر کو وابستہ کرنا جدوجہد کو بدنام کرنیکی کوشش ہے، حزب المجاہدین

سرینگر: القاعدہ کو تحریک آزادی کشمیر سے جوڑنے کو بدنام کرنے کا حربہ قرار دیتے حزب المجاہدین کے عسکری کمانڈر ریاض نائیکو نے پاکستانی پرچم کو اپنا جھنڈا قرار دیا۔ ٹہاب جھڑپ میں شہید ہونے والے شارق احمد شیخ کے نماز جنازہ میں ریاض احمد نائیکو نمودار ہوئے، جس دوران وہاں پر موجود لوگوں نے اسلام و آزادی کے حق میں زبردست نعرہ بازی کی۔ اس موقعہ پر موجود ہزاروں لوگوں سے حزب المجاہدین کے کمانڈر نے مختصر تقریر کے دوران کہا کہ القاعدہ سے وابستگی اصل میں کشمیر کی تحریک کو بدنام کرنے کے لئے ہے۔

انہوں نے لوگوں سے کہا ’’وہ سازشوں کا شکار نہ بنیں کیونکہ کشمیر کی تحریک آزادی کو بدنام کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے‘‘۔ القاعدہ کی طرف سے کشمیر کے لئے حال ہی میں نامزد کمانڈر ذاکر موسٰی کا نام لئے بغیر انہوں نے کہا کہ جن تمام لوگوں نے اسلام کا پرچم تھاما ہے، یہ ضروری نہیں ہے کہ وہ ہمارے اپنے ہوں۔ ان کا کہنا تھا کہ یہاں نہ کوئی القاعدہ ہے اور نہ داعش۔ ریاض نائیکو نے کہا ’’پاکستانی پرچم، ہمارا پرچم ہے اور ہماری جدوجہد کو القاعدہ یا داعش سے وابستہ کرنا، تحریک آزادی کو بدنام کرنے کی ایک چال ہے‘‘۔ نائیکو نے لوگوں سے کہا کہ ان کی حمایت نہ کریں جو پاکستانی پرچم اور ہماری بھارت سے جدوجہد آزادی کی مخالفت کرتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

تنازعہ کشمیر کی بدولت پورا جنوبی ایشیا ایک ہیجانی کیفیت کا شکار ہے، مسعود خان

صدر آزاد کشمیر سردار مسعود خان نے کہا ہے کہ ڈاکٹر عاصمہ شاکر کی کتاب …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے